Ali Kazim

Multiple works, variable dimensions

Untitled (black Magic II), watercolour on paper, 2006
Untitled (sleep series), watercolour on wasli, 2008
Untitled (man of faith series), watercolour on paper, 2019
Unfinished 01, watercolour pigments on paper
Unfinished 02, watercolour pigments on paper
Unfinished 03, watercolour pigments on paper
Unfinished 04, watercolour pigments on paper
Unfinished 05, self-portrait, watercolour pigments on wasli paper

Ali Kazim is a fine and highly skilled and accomplished painter, but he is also a deeply compelling and accomplished teller of mysterious and wondrous stories. These stories in turn contain subtle, yet strong references to autobiographical narratives and reflections on the self. The artist uses watercolour pigments as his preferred medium of mark making. Yet Kazim’s work demonstrates a very unusual technique of using these watercolour pigments to give an almost layered, textured effect that give weight and form to the figures in his paintings.
Within these paintings there is a fascinating interplay between the notion of beauty as a combination of visual qualities that please and indulge the aesthetic senses, and the beauty to be found in simple spiritual or religious devotion. The figures in Kazim’s paintings, in embracing the former notion of beauty, refuse, simultaneously, to distance or separate themselves from the latter notion of that which is spiritually beautiful.
Perhaps more than anything, Ali Kazim’s work fascinates and intrigues us because we think we discern within it what one writer has called very private feelings and equally private fragments of autobiography being brought into the public arena. Like the figures he draws and paints, the works reveal as much as they conceal. Surprisingly perhaps, given the artist’s subject matter, these are singularly unsentimental works that do much to (re)animate our ideas of identity, beauty and spiritual devotion.

علی كاظم

علی کاظم ایک اعل ٰی مہارت یافتہ مصور ہیں، لیکن وہ پراسرار اور حیرت بھری کہانیوں کے ایک گہرے ترغیب دلانے والے اور کامل فن قصہ گو بھی ہیں۔ یہ کہانیاں خود نوشتی بیانیوں اور اظہار ذات کے بارے اپنے آپ میں نازک، مگر قوی حوالے لیے ہوئے ہے۔ مصور واٹرکلر کے سفوف کًو اپنے نشان کشی کے ترجیحی میڈیم کے طور پر استعمال کرتا ہے۔ البتہ کاظم کا تخلیقی کام تقریبا ایک تہہ دار، مسطح تاثیر ابھارنے کے لیے ان آبی رنگ کے سفوفوں کی ایک بہت غیر معمولی تکنیک استعمال کرنے کا مظاہرہ کرتا ہے، جو اس کی تصویر میں موجود شبیہوں کو وزن اور شکل فراہم کرتا ہے۔

ان پینٹنگز کے اندر بصری محاسن کے ایک امتزاج کے طور پر تصور حسن کے درمیان ایک دل لبھانے والا تعامل ہے جو جمالیاتی حواس کو اور سادہ روحانی اور مذہبی وارفتگی میں پائے جانے والے حسن کو راحت بخشتا اور محو کر دیتا ہے۔ کاظم کی تصاویر میں موجود شبیہیں، سابقہ تصور حسن کو اختیار کرنے میں، روحانی طور پر حسین ہونے کے بعد الذکر تصور سے اپنے آپ کوالگ کرنے یا فاصلہ رکھنے کے لیے، بیک وقت، رد کرتی ہیں۔

شاید سب باتوں سے بڑھ کر، علی کاظم کے کام ہمارے دل کو موہتے اور لبھاتے ہیں کیونکہ ہمیں لگتاہےکہ ہم اس کےاندراس شےکوواضح طورپرالگ کرکے دیکھ سکتےہیں جوکہ لکھنےوالے کے بقول بڑے نجی احساسات اور اتنے ہی نجی خودنوشتی ٹکڑے ہیں جو عوامی منچ پہ لائے گئے ہیں۔ جیسی کہ شبیہیں وہ کھینچتے اور نقش کرتے ہیں، یہ فنپارے اتنا چھپاتے نہیں، جتنا کہ آشکار کرتے ہیں۔ شاید حیران کن طور پر، فنکار کے مواد موضوع کو ملحوظ رکھتے ہوئے، یہ یکتا طور پر غیر جذباتی کام ہیں جو کافی حد تک ہمارے شناخت، حسن اور روحانی وارفتگی کے تصور کو(از س ِر نو) متحرک کرتے ہیں۔

 




Text written by: Eddie Chambers